NewsHub

خدا کیلئے منرل واٹر نہ پئیں: چیف جسٹس کی عوام سے اپیل

اسلام آباد: سپریم کورٹ میں منرل واٹر کمپنیز سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی جس میں چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے عوام سے اپیل کہ منرل واٹر والا پانی ہی نہ پئیں ۔

چیف جسٹس نے ریمارکس دئے کہ بوتلوں میں جعلی پانی بیچا جا رہا ہے، اربوں گیلن پانی لے کر لاکھوں روپے بھی نہیں دیے گئے۔

چیف جسٹس نے کہا ہم پانی بیچنے والی کمپنیز کی ٹربائنز بند کر دیتے ہیں، انہیں نلکے لگا کردیتے ہیں۔

چیف جسٹس نے منرل واٹر کمپنیز کو ایک روپے فی لیٹر ادا کرنے کی تجویز دیتے ہوئے کہا کمپنوں کو تجویز پسند ہے تو بتائیں ورنہ کمپنیاں بند کریں۔

چیف جسٹس نے مزید کہا کہ ایک پیسہ ادا کرکے 92 روپے فی لیٹربیچنے کی اجازت نہیں دے سکتے۔ اربوں گیلن پانی استعمال کرکے اربوں کما گئے ہیں۔

چیف جسٹس نے عوام سےاپیل کی ہے کہ منرل واٹر والا پانی ہی نہ پئیں، انہوں نے کہا خدا کے لیے بوتلوں کا پانی نہ پیا جائے۔

چیف جسٹس  نے ریمارکس دئے کہ یہ کمپنیاں تو ایک روپے فی لیٹر بھی دینے کو تیار نہیں، ہمارا ہی پانی بوتلوں میں بھر کرہمیں ہی بیچا جاتا ہے۔ لاہور میں زیر زمین پانی چار سو فٹ تک پہنچ گیا ہے۔

Read More
  • 402
Loading ···
No more