NewsHub

اصولی سیاست کی اور پھانسی کا پھندا چوما مگر یوٹرن نہیں لیا، بلاول بھٹو

پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی)کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ ہمیشہ اصولی سیاست کی اور پھانسی کا پھندا چوما مگر یو ٹرن نہیں لیا اور نہ ہی اصولوں پر سمجھوتہ کیا۔

اسلام آباد میں زیبسٹ یونیورسٹی میں سندھی ٹوپی اجرک کے دن کے حوالے سے منعقد تقریب سے خطاب میں ان کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی کبھی اپنے فیصلوں سے پیچھے نہیں ہٹی تاہم تمام لوگوں کے لئے آئین و قانون پر یکساں عمل چاہتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: ایک کروڑ 50 لاکھ ووٹرز کو ان کے مستقل پتے پر درج کیے جانے کا امکان

بلاول بھٹو نے کہا کہ فخر ہے کہ ہم اصولوں پرکھڑے ہیں اور جئےبھٹو کانعرہ لگا کر ہم نے تین آمروں کو گھر کا راستہ دکھایا۔

پی پی پی کے چیئرمین نے واضح کیا کہ ہم اپنی تمام ثقافت، زبانوں، روایات کے آمین ہیں ،سندھ کا ایک تاریخی حصہ ہے، موہنجو داڑو سے پتہ چلتا ہے یہ دنیا کی قدیم ترین تہذیب ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ سندھ وہ خطہ ہے جس کو باب الاسلام کے نام سے یاد کیا جاتا ہے، یہاں لاقانونیت کی کوئی جگہ نہیں۔

مزید پڑھیں: پیپلز پارٹی کا قیادت کے ‘میڈیا ٹرائل’ پر چیف جسٹس سے نوٹس کا مطالبہ

بلاول بھٹو نے دعویٰ کیا کہ ہم نے دہشت گردوں کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر بات کی۔

اس موقعے پر یونیورسٹی کے سربراہ خسرو پرویز نے تمام مہمانوں کو سندھی ٹوپی اور اجرک پہنائی۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ پیپلز پارٹی ہمیشہ اپنے اصولوں پرکھڑی رہی اور پھانسی کا پھندا چوما مگر یوٹرن نہیں لیا۔

انہوں نے” مرسو مرسوسندھ نہ ڈیسوں“ کا نعرہ لگاتے ہوئے کہا کہ ہم اپنی تمام ثقافتوں، زبانوں اور روایات کے آمین ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: جعلی اکاؤنٹس کیس: بلاول بھٹو سے بھی معلومات حاصل کرنے کا فیصلہ

ان کا کہنا تھا کہ ’ہم آزادی اظہار رائے پر یقین رکھتے ہیں‘۔

بلاول بھٹو کے ہمراہ پیپلز پارٹی کے سیکرٹری جنرل نیئر حسین بخاری، سابق سینیٹرفرحت اللہ بابر، سابق وزیراعظم راجہ پرویز اشرف اور سینیٹرشیری رحمان نے شرکت کی۔

Read More
  • 452
Loading ···
No more